The Latest

وحدت نیوز (کراچی) حکومت دہشت گردوں کے ایسے ناز اٹھا رہی ہے جیسے سسرال میں داماد کے اٹھائے جاتے ہیں ،روزانہ کی نئی نئی فرمائشیں حکومت کے لئے باعث شرم ہو نی چائیں ، حکومت کا دہشت گردوں کو آسان راستہ فراہم کرنا پاکستان کو مذید مشکلات سے دوچار کرے گا ، مذاکرات کے آغاز پر ہی فوجی افسران کو شہید کر کے طالبان نے اپنے آئندہ کے حکمت عملی ظاہر کر دی تھی ، طالبان کی جانب سے کالعدم تکفیری جماعتوں کے گرفتار دہشت گردوں کی رہائی کا مطالبہ تشویش ناک ہے، اس کے خطرناک نتائج سامنے آئیں گے ۔

ان خیالات کااظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل وترجمان علامہ سید حسن ظفر نقوی نے وحدت ہاؤس کراچی سے جاری اپنی بیان میں کیا ، ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت خصوصاً چوہدری نثار علی خان مادر وطن کے دشمن طالبان کیلئے جو ہمدردیاں رکھے ہو ئے ہیں وہ ہماری قومی خودمختاری اور ملی غیرت کے خلاف ہے ، حکمران ایسے ردعمل دے رہی ہے جیسے طالبان نہیں بلکہ حکومت مجرم ہو، ان کا کہنا تھا کہ طالبان سے مزاکرات اور ان کی ہر ناجائز فرمائش کو پورا کر نے والی سیاسی مذہبی جماعتیں جلد ان کے مکر وفریب کامزہ چکھیں گی او ر خمیازہ اس ملک کے اٹھارہ کڑوڑ مظلوم شہریوں کو بم دھماکوں ، کود کش حملوں اور ٹارگٹ کلنگ کی صورت میں بھگتا ہو گا ۔

علامہ حسن ظفر نقوی نے طالبان دہشت گردو ں کی خواہش پر بدنام زمانہ کالعدم دہشت گرد جماعتوں کے گرفتار دہشت گردوں کی رہائی پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہو ئے کہا ہے کہ مادر وطن کو خون میں آلودہ کرنے والے ان دہشت گردوں کی رہائی کے لئے طالبان کے اسرار نے ثابت کر دیا کہ یہ دہشت گرد تکفیری برائے راست طالبان اور القائدہ کے ایجنڈے پر دہشت گردی پھیلا رہے ہیں ، حکومت ان دہشت گردوں کو رہا کر کہ ایک مرتبہ پھر پاکستان میں شیعہ مکتب فکر کی نسل کشی کی سازش کا حصہ بن رہی ہے ۔

انہوں نے وفاقی حکومت کو متنبہ کیا ہے کے ملکی سالمیت کو داؤ پر نہ لگائے ، طالبان سے وفا کی امید نہ رکھی جائے ، مایوسی کہ سوا کچھ ہا تھ نہیں آئے گا ، عوام حکمرانوں سے ناامید ہو چکے ہیں ، اگر عوام کو کسی سے ملکی سالمیت کے تحفظ کا آسرا ہے تو وہ پاک فوج ہے ، فوج اپنے محب وطن ہو نے کو ثبوت دیتے ہو ئے پو رے ملک میں طالبان اور ان کے لوکل ایجنٹوں کے خلاف موثر کاروائی عمل میں لائے ۔

وحدت نیوز (کراچی )سندھ حکومت کی تین ماہ کی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے ، ٹارگٹڈ آپریشن سے وہ نتائج حاصل نہیں ہو ئے جس کی عوام کو توقع تھی ،لانڈھی کورنگی لیاری اور اورنگی ٹاؤن کی طرح دہشت گردوں کی جنت بن چکا ہے، اگرشہر میں نقص امن کی صورت حال اسی طرح برقرار رہی تو آئندہ حال سکیورٹی اداروں کے بس سے بھی باہر ہونگے ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان صوبہ سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ مختار احمد امامی نے وحدت ہاؤس کراچی سے جاری اپنے مذمتی بیان میں کیا ۔

ان کا کہنا تھا کہ مجید کالونی کے سجادیہ امام بارگاہ پر کریکر حملہ محرم الحرام سے قبل نیک شکون نہیں ہے ،لانڈھی کے مختلف علاقوں فیوچر کالونی ، بلال کالونی ، عوامی کالونی ،بھینس کالونی، شاہ لطیف ٹاؤن وغیرہ میں کالعدم جماعتوں کی دہشت گرد کاروائیوں میں کئی بیگناہ شہری لقمہ اجل بن چکے ہیں، صوبائی حکومت ، خفیہ ایجنسیاں اور سکیورٹی ادارے اپنی ذمہ داریوں کوسنجیدگی سے انجام دیں ، ورنہ شہر کسی بڑی دہشت گرد کاروائی کا متحمل نہیں ہو سکتا ، انہوں نے کہا کہ ٹارگٹڈ آپریشن اور اس سے قبل گرفتار کیئے گئے سینکڑوں دہشت گردوں کو جیلوں میں کیوں مہمان بنا کر رکھا گیا ہے ؟ کہیں حکیم اللہ محسود کے حکم کو انتظار تو نہیں کیا جا رہا ، انہوں نے طالبان کی جانب سے کالعدم جماعتوں کے گرفتار دہشت گردوں کی ممکنہ رہائی کے مطالبے پر تشویش کا اظہار کر تے ہو ئے کہا کہ اگر وفاقی حکومت نے ان خطرناک دہشت گردوں کو رہا کر نے کا سوچا بھی تو ، یہ حکومت کے لئے بہتر نہیں ہو گا ، پاکستان کے محب وطن عوام حکومت کے اس وطن دشمن اور عوام دشمن فیصلے کے خلاف سراپا احتجاج بن جا ئیں گے ۔

انہوں نے پشاور میں اہل سنت مکتب فکر کی مسجد پر کریکر حملے کی بھی پرزور مذمت کی ہے ، انہوں نے صوبائی حکومت ، قانون نافذ کر نے والے ادارو ں ، خصوصاً وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ ، ڈی جی رینجرز، اور آئی جی سے مطالبہ کیا ہے کہ جلد از جلد مجید کالونی امام بارگاہ پر حملے میں ملوث دہشت گردوں کو گرفتار کیا جائے اور انہیں عوام کے سامنے کیفر کردار تک پہنچایا جائے ، تاکہ اس قسم کی دہشت گرد کاروائیوں کا تدارک ممکن ہو سکے۔

وحدت نیوز ( اصفہان) مجلس وحدت مسلمین شعبہ اصفہان نے کابینہ کا اعلان کردیا، کابینہ کا اعلان ایک تقریب میں کیا گیا جس کی صدارت سیکرٹری جنرل سید محمد تقی زیدی نے کی۔ کابینہ میں مولانا تصور علی ڈپٹی سیکرٹری جنرل، مولانا شجاعت علی سیکرٹری روابط، سیکرٹری نشرواشاعت آل حسن، سیکرٹری شعبہ عزادری عسکری رضا، سیکرٹری اُمور شہداء محسن مختار فانی، سیکرٹری تعلیم مولانا شجاعت علی، سیکرٹری مالیات جواد حسین، معاون مجالس و منقبت خواں و نوحہ خوان ابوذر جعفری شامل ہیں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری جنرل اصفہان سید محمد تقی زیدی نے کہا کہ رہبر معظم سید علی خامنہ ای نے اپنے خطاب میں وحدت کو ضروری قرار دیا ہے اس لیے رہبر کے حکم پر ہم سب کو لبیک کہنا چاہیے اور اس پر عمل بھی کرنا چاہیے۔ اس سوال کے جواب میں کہا کہ اگر کوئی آپ کے خلاف مکر کرتا ہے تو اُس کو اللہ پہ چھوڑ دو۔ وہ سب سے بہتر انتقام لینے والا ہے۔
 
شام کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے تقی زیدی کا کہناتھا کہ بہت جلد قائد مقاومت سید حسن نصراللہ کا وہ وعدہ جو اُنہوں شام کی عوام اور دنیا سے کیا تھا پورا ہوتا دکھائی دے گا۔ دنیا کے تمام دہشتگردوں کو شام میں عبرتناک شکست ہوگی۔ اُنہوں نے کہا کہ ہم ہر اُس پاکستانی کی مذمت کرتے ہیں جو طالبان سے مذاکرات کا خواہاں ہے۔ جو طالبان سے مذاکرات کی باتیں کرتے ہیں کیا وہ پاک فوج، پولیس، رینجرز اور شہداء کو بھول گئے ہیں جو طالبان سے مذاکرات کرنا چاہتے ہیں اصل میں وہی طالبان ہیں۔

وحدت نیوز( لاہور) مجلس وحدت مسلمین کی غیر جماعتی بنیادوں پر بلدیاتی الیکشن کرانے کی درخواست کی سماعت لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس عمرعطا بندیال نے کی۔ دوران سماعت چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے پٹیشن کو آئینی و قانونی قرار دیتے ہوئے حکومت پنجاب سے 25 ستمبرتک جواب طلب کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ عمر عطا بندیال نے ریمارکس دئیے کہ حکومت اس حوالے سے اپنا واضح جواب دے اس سے پہلے کہ عدالت خود کوئی اقدام کرے۔

یاد رہے کہ مجلس وحدت مسلمین کے پولیٹیکل کونسل کے اجلاس میں سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے حکم پر فیصلہ کیا گیا تھا کہ پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کو غیر جماعتی بنیادوں پر کرانے کے خلاف عدالتی و عوامی سمیت ہر فورم پر آواز اٹھائی جائی گی کیونکہ غیر جماعتی بنیادوں پر الیکشن کرانا غیر آئینی اور غیر جمہوری اقدام ہیں اور آمرانہ سوچ کی عکاسی ہے جس پر پہلے مرحلے میں ہائیکورٹ سے رجوع کیا گیا ہے جس پر عدالت نے پنجاب حکومت سے جواب طلب کر لیا ہے۔

وحدت نیوز  (ڈیرہ اسماعیل خان)  شہدائے سنٹرل جیل ڈیرہ اسماعیل خان کا چہلم حاجی مورہ ڈیرہ اسماعیل خان میں منعقد ہوا۔ جس میں وارثان شہداء کے علاوہ مومنین کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ چہلم کی مجلس سے شیعہ علماء کونسل اور مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے رہنماؤں نے خطاب کیا۔ ایم ڈبلیو ایم صوبہ خیبر پختون خواہ کے صوبائی سیکرٹری تنظیم سازی علامہ وحید عباس کاظمی نے کہا کہ آج ریاست دہشت گردوں کے سامنے سرنڈر کر رہی ہے۔ لیکن شیعہ قوم نے دہشت گردوں سے اپنے خون کا حساب لینا ہے۔ ڈیرہ اسماعیل خان کے مومنین نے عصر کی کربلا میں کردار زینبی (س) ادا کیا۔ شہداء نے اپنا کردار بطریق احسن پورا کیا، اب ہمیں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ مولانا وحید عباس نے کہا کہ حزب اللہ لبنان نے شہید وں کے خون کی طاقت سے وقت کی استعماری طاقتوں کو سرنگوں کر دیا۔ استعماری طاقتیں جو شام کے درپے تھیں، صرف حزب اللہ کی وجہ سے پسپاہ ہوئیں۔ انہوں نے کہا کہ آج پاکستان میں دہشت گردوں کے سامنے ریاست ہتھیار ڈال کر مذاکرات میں محو ہے۔ لیکن افسوسناک امر ہے کہ اس دہشت گردی کے ہاتھوں سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملت تشیع کی نمائندگی کو آل پارٹیز کانفرنس میں اہمیت نہیں دی گئی۔

وحدت نیوز (ڈیرہ اسماعیل خان)  شہدائے سنٹرل جیل ڈیرہ اسماعیل خان کے چہلم کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم صوبہ خیبر پختون خواہ کے صوبائی سیکرٹری فلاح و بہبود علامہ ارشاد حسین نے کہا کہ ہمارا دشمن جان لے کہ ہم شہادتوں سے خوفزدہ ہونے والے نہیں بلکہ ہم شہادت کو سعادت سمجھتے ہیں اور شہداء کے لہو سے ہماری قوم مضبوط تر ہوتی ہے۔ سنٹرل جیل ڈیرہ میں مومنین کو صرف اس جرم میں مارا گیا کہ وہ ولایت علی ابن ابیطالب (ع) پر یقین رکھتے تھے۔ شہداء نے اپنے سینوں پر گولیاں کھا کر اپنا فرض پورا کر دیا۔ اب ہماری ذمہ داری ہے کہ شہداء کے خون سے وفاداری کا ثبوت دیتے ہوئے مشن شہداء کوپورا کریں۔ ہم شہیدوں کے خون کے وارث ہیں، ہم حکومت سے سوال کرتے ہیں کہ ڈیرہ اسماعیل خان جیل میں اختر عباس اور ان کے ساتھیوں کو کس جرم میں قتل کیا گیا، حکومت ہمیں اس خون کا قصاص دے۔

وحدت نیوز (ڈیرہ اسماعیل خان)  چہلم شہدائے سنٹرل جیل ڈیرہ اسماعیل خان کی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے رہنما علامہ عبدالخالق اسدی کا کہنا تھا کہ شہدائے ڈیرہ دور حاضر میں مکتب محمد و آل محمد (ع) کی صداقت کی دلیل بن کر ابھرے ہیں۔ شہادت کی موت تشیع کے لئے زیور کی مانند ہے۔ شہادت تشیع کی میراث ہے جسے ڈیرہ کے مومنین نے اپنایا اور اس وطن کیلئے قربانیاں دیں۔ جن لوگوں نے اس وطن کے لئے قربانیاں دیں وہ اسے برباد ہوتا نہیں دیکھ سکتے۔

علامہ عبدالخالق اسدی کا کہنا تھا کہ سب سے زیادہ تشیع کو توہین رسالت قانون کی زد میں لایا گیا۔ رانا ثنا اللہ کے دور میں شیعہ افرا دکے خلاف سب سے زیادہ ایف آئی آریں کاٹی گئیں۔ مگر بھکر میں اہانت تشیع کرنے والی فرقہ کو کھلی چھوٹ دی گئی اور شیعہ افراد کو ہی کچلا گیا۔ عبدالخالق اسدی کا کہنا تھا کہ سنٹرل جیل ڈیرہ اسماعیل خان کے شہداء کی قربانی کو ہم کبھی نہیں بھول سکتے۔ پی ٹی آئی ہو یا ن لیگ ہو حکومت کو جواب دہ ہونا ہوگا۔ ہم اس سازش کو بے نقاب کرکے دم لیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ مٹی کے پہلوان شام کیوں نہیں جاتے، جہاں سے ان کی لاشوں کے انبار پاکستان واپس آرہے۔ یہ وہیں جہاد کرتے ہیں جہاں حکومت ان کو سپورٹ کرتی ہے۔

اتحاد بین المومنین پر زور دیتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم پنجاب کے رہنما نے کہا کہ ہمارے آپس کے جھگڑے، مسجد و مدرسہ کی دوری اور مدرسہ کی مدرسہ سے دشمنی قابل افسوس ہے۔ فاصلوں کو جمع کر کے ہمیں ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا ہونا ہوگا۔ سانحہ سنٹرل جیل کے خلاف عدالتی دروازہ کھٹکھٹائیں گے، مرکز صوبے اور جیل انتظامیہ کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائیگا۔ ان سے پوچھا جائے گا کہ کس طرح ہمارے لوگوں کو جیل انتطامیہ اور حکومت کی تحویل میں شہید کیا گیا۔ دہشت گردی کے خلاف ہونے والی آل پارٹیز کانفرنس میں سب سے زیادہ متاثرہ ملت تشیع کی نمائندگی کو نہ بلانا قابل مذمت ہے۔ امریکہ، اسرائیل، سعودی عرب اور انڈیاکے سیاسی گماشتے سن لیں ہم پاکستان کا قدرتی دفاع ہیں۔

وحدت نیوز ( پشاور) مجلس وحدت مسلمین پاکستا ن صوبہ خیبر پختونخواہ کے سیکریٹری جنرل علامہ سبیل حسن مظاہری کہ مستعفی ہو نے کہ بعد علامہ سید محمد سبطین حسینی کو صوبائی آرگنائزر نامزد کر دیا گیا ،اور علامہ سبیل مظاہری کی کابینہ کو تحلیل کر دیا گیا ہے ۔وحدت میڈیا سیل سے گفتگو کر تے ہو ئے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل وسیکریٹری امور تنظیم علامہ شفقت شیرازی کا کہنا تھا کہ علامہ سبیل مظاہری نے تحصیل علم کے لئے قم المقدسہ میں مستقل سکونت اختیار کر نے اور تنظیمی امور کو بطریق احسن انجام نہ دیئے جانے کہ سبب اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے ، ان کہ جگہ علامہ سید محمد سبطین حسینی کو آئندہ اپریل 2014تک کے لئے صوبائی آرگنائزر نامزد کر دیا گیا ہے ، جس کی تو ثیق مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کردی ہے ،علامہ شفقت شیرازی کا کہنا تھا کہ آئند ہ سالانہ مرکزی تنظیمی کنونشن تک علامہ سید محمد سبطین حسینی اپنی تنظیمی ذمہ داریاں انجا م دیں گے ، اور صوبے بھر میں تنظیم سازی کے لئے فعالیت کریں گے اور اپریل 2014میں باقائدہ انتخابات کے بعد آئندہ 2سال کے لئے نئے صوبائی سیکریٹری جنرل کا انتخاب عمل لایا جا ئے گا۔

واضح رہے کہ علامہ سیدمحمد سبطین حسینی کا تعلق پاراچنار سے ہے ، آپ نے ابتدائی دینی تعلیم مدرسہ شہید عارف حسینی (ر ہ) پشاور سے حاصل کی اور اس کے بعد حوزوی تعلیم کے حصول کے لئے قم المقدسہ تشریف لے گئے ، اس وقت وہ تدریس کے شعبے سے وابستہ ہیں ، اور شہدائے پاراچنار کے بچوں کی تربیت و کفالت کے لئے ٹیکسلا میں مدرسہ القائم عج کے سرپرست کی حیثیت سے ذمہ داریاں انجام دے رہے ہیں ۔

وحدت نیوز (مظفرآباد) حکومت پاکستان کو بھارتی حکمرانوں سے ضرور سبق لینا چاہیے، جو بارڈر پر 4فوجیوں کی ہلاکت پر سفارتی تعلقات تک منقطع کر لیتے ہیں، حتیٰ کہ نواز منموہن ملاقات بھی کٹھائی میں پڑ جاتی ہے، لیکن پاکستان کے حکمران سیاسی جماعتیں اور عسکری قیادت فوجی آفیسران کے قتل، حساس مقامات پر حملوں کے باوجود دہشتگردوں سے مذاکرات کا راگ الاپ رہی ہے۔

ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین آزاد جموں و کشمیر ضلع مظفرآباد کے سیکرٹری جنرل علامہ سید طالب ہمدانی نے میڈیاسے بات چیت کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کا مسئلہ اس وقت ملکی سلامتی کے لیئے ناگزیر صورتحال اختیار کر چکا ہے، لہذا ضرورت اس امر کی ہے کہ اس وقت ملکی سلامتی کے لیئے ناگزیر صورتحال اختیار کر چکا ہے، اس کا خاتمہ کیا جا سکے، حکومت پاکستان سری لنکا کی مثال کو سامنے رکھے، کہ انہوں نے دہشتگردوں سے مذاکرات کے بجائے جنگ کا راستہ اختیار کر کے ہمیشہ کے لیئے ان کا وجود ختم کردیا، اور آج وہ ترقی کی راہ پر گامزن ہیں، مذاکرات کا فائدہ صرف دہشتگردوں کو ہو گا، وہ اس فرصت میں اپنی توانائیوں میں اضافہ کریں گے، اور پھر کچھ عرصہ بعد منظم انداز میں کاروائیاں کر کے پھر سے سرزمین پاکستان کو خون میں نہلا دیں گے، اپر دیر میں ہونیوالی دہشتگردی سے یہ بات روز روشن کی طرح عیاں ہوگئی ہے کہ طالبان مذاکرات کے حق میں نہیں بلکہ حکومت اس کوشش میں ہے کہ ان کے ساتھ مذاکرات کیئے جائیں۔

علامہ طالب ہمدانی نے کہا کہ طالبان کے ساتھ مذاکرات شہداء کے مقدس خون سے غداری ہے، انہوں نے حالیہ APCکی بھی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ ملکی سلامتی کے ساتھ ایک منظم سازش کے ساتھ کھیل ہے۔

وحدت نیوز (کراچی) لانڈھی مجید کالونی میں نواز ہوٹل کے قریب نامعلوم افراد امام بارگاہ سجادیہ کے اندر دستی بم پھینک کرفرار ہو گئے، دستی بم پھٹنے کے نتیجے میں 1 افراد جاں بحق جب کہ  16  زخمی ہوگئے، زخمیوں کو مقامی افراد نے موٹر سائیکلوں، رکشوں اور ٹیکسی میں سوشل سیکیورٹی اسپتال اور دیگر اسپتالوں میں منتقل کیا جہاں ابتدائی طبی امداد ملنے کے بعد زخمیوں کو  ایمبولنسز میں جناح اسپتال منتقل کیا گیا۔ جناح اسپتال میں 10 سے زائد زخمیوں کو لایا گیا، اسپتال زرائع کے مطابق زخمیوں میں سے 4 افراد جن کی حالت تشویشناک ہے کو نجی اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ بم ڈسپوزل اسکواڈ کے عملے نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر شواہد اکٹھے کرنا شروع کر دیئے۔

ایس ایس پی ملیر ناصر آفتاب کا کہنا ہے کہ دھماکے میں روسی ساختہ دستی بم آر جی ون استعمال کیا گیا، دھماکے سے کچھ دیر قبل امام بارگاہ میں مجلس منعقد کی گئی تھی جس کے بعد وہاں لنگر کا اہتمام کیا جا رہا تھا، دھماکے کے وقت پلاٹ میں 30 سے زائد افراد موجود تھے۔ ایس ایس پی ملیر کا کہنا ہے کہ مناسب سیکیورٹی فراہم نہ کرنے پرایس ایچ او قائدآباد کو برطرف کر دیا گیا ہے۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ نے دھماکے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی سندھ سے واقعے کی رپورٹ طلب کر لی ہے اور ساتھ ہی حءم دیا کہ شہریوں کے تحفظ کے لئے کراچی میں سیکیورٹی کے انتظامات کو بہتر بنایا جائے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree