The Latest

وحدت نیوز(ڈیرہ اسماعیل خان)مجلس وحدت مسلمین ڈیرہ اسماعیل خان کی جانب سے ضلع میں تنظیم سازی کا عمل جاری ہے، ایم ڈبلیو ایم صوبہ خیبر پختونخوا کے صوبائی نائب سید اسد علی زیدی اور ضلع ڈیرہ اسماعیل کے صدر مولانا سید غضنفر علی نقوی نے یونٹ فتح اور نون کا دورہ کیا، اس موقع پر اہل علاقہ و یونٹس اراکین سے ملاقات کی۔ گاوں فتح کے یونٹ کا صدر محمد نقی شاہ کو منتخب کیا گیا، ایم ڈبلیو ایم ڈی آئی خان کے صدر مولانا سید غضنفر علی نقوی نے یونٹ صدر نقی شاہ سے ان کے عہدے کا حلف لیا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) چیئرمین مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کوئٹہ میں خودکش بم دھماکے اور سکیورٹی فورسز کے قافلے پر فائرنگ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس وین اورسکیورٹی اداروں پر حملے قابل مذمت ہیں شہدا کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،شہیدو زخمی ہونے والے جوانوں کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت وہمدردی کرتے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے بہادر عوام کو دہشت گردی اور دہشت گردوں سے ڈرایا نہیں جا سکتا، بلوچستان کے عوام کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔بلوچستان کودہشت گردوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑا جا سکتا ہے۔ ہماری تمام تر ہمدردیاں بلوچ عوام کے ساتھ ہیں، حکمرانوں کو چاہیے کہ وہ دہشت گردی کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کے خلاف مربوط حکمت عملی وضع کریں۔

وحدت نیوز(دنیور) مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین گلگت کی صدر/سابقہ رکن جی بی اسمبلی محترمہ بی بی سلیمہ نے مؤمنات کی خصوصی دعوت پر گلگت کے علاقے دنیور پہنچیں جہاں انہوں نے قرآن سنٹر کا بھی دورہ کیا اور معلمات سے ملاقات کی۔

 ملاقات میں قرآن سینٹر کے معلمات نے مدارس کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا جس پر محترمہ بی بی سلیمہ صاحبہ نے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کروائی اس موقع پر صدر ایم ڈبلیو ایم نے دینیات سینٹر کے بچوں کیلئے مرکز کی جانب سے قرآنی آیات حفظ کرنے کا ٹاسک دیا۔

علاوہ ازیں صدر ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین گلگت نے دنیور میں تنظیمی خواہران،علاقے کی فعال خواتین اور خواہر عدیانہ بتول (فارغ التحصیل المصطفی العالمیہ یونیورسٹی) سے بھی ملاقات جنہوں نے تنظیم کے ساتھ بھرپور تعاون کی یقین دہانی کروائی۔

وحدت نیوز(چنیوٹ) مسجد زینبیہ سلام اللہ علیہا رجوعہ سادات میں وحدت یوتھ ونگ کا اجلاس منعقد ہواجس میںایم ڈبلیوایم تحصیل رجوعہ یوتھ ونگ کی کابینہ کا اعلان کیا گیا۔نامزد اراکین میں صدربرادر وقار علی ،نائب صدربرادر شہریار کربلائی، جنرل سیکرٹری برادر شعور علی،فنانس سیکرٹری شناور سلیمانی اور رحمٰن علی،میڈیا سیکریٹری برادر دلاور عباس اوررابطہ سیکرٹری برادر ناطق علی اوربرادر علی رضا شامل ہیں ۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی مرکزی کردار سازی کونسل کی جانب سے الحمدللہ اسٹڈی سرکلز کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے ، ایم ڈبلیوایم کے وائس چیئرمین علامہ سید احمد اقبال رضوی نے کہا ہے کہ تمام صوبوں، ڈویژنز، اضلاع اور یونٹس کی خصوصی کاوشیں اس پروگرام کی کامیابی کے لیے بہت ضروری ہیں۔

 مرکزی کردار سازی کونسل نے فیصلہ کیا ہے کہ اس ہفتے کا اسٹڈی سرکل پورے پاکستان میں ایک ہی دن 4 دسمبر بروز اتوار تمام صوبوں، اضلاع اور یونٹس میں ہوگا اسٹڈی سرکل کی اہمیت کے پیش نظر مرکزی کابینہ اور صوبائی کابینہ اپنے اپنے متعلقہ اضلاع اور یونٹس کے پروگرام میں شرکت کریں گے(جو ان کو سوٹ کرتا ہو ) اس کی تفصیلی رپورٹ ، مرکزی کردار سازی کونسل کے رکن آقا ظہیر کربلائی کے وٹس ایپ نمبر پر ارسال فرمادیں ۔03004244863/ 03359242345

وحدت نیوز(کراچی) دعا کمیٹی صوبائی سکریٹریٹ مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے زیر اہتمام ہفتہ وار اجتماعی دعائے توسل و اظہار یکجہتی مسنگ پرسنز فیملیز کے ساتھ محفل شاہ خراسان روڈ پر انعقاد کیا گیا جس میں مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے صدر مولانا شیخ محمد صادق جعفری نے دعا کی تلاوت کی جبکہ برادر محمد علی جلالوی نے منقبت پیش کی، تقریب میں مذہبی، سماجی شخصیات، مسنگ پرسنز کے اہل خانہ اور عمائدین نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

 اس موقع پر ایم ڈبلیو ایم کراچی کے سیکریٹری سیاسیات علامہ مبشر حسن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کالعدم  تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے ملک بھر میں دہشتگردانہ حملوں کی کھلی دھمکیاں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ محب وطن شیعیان حیدر کرارؑ نے ہمیشہ قومی سلامتی میں بنیادی کردار ادا کیا ہے،تاہم افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ ملک خداداد میں بانیان پاکستان کی اولادوں ملت جعفریہ کو حب الوطنی کی سزا دی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف تو ملت جعفریہ کو ملک میں دہشتگردی کا نشانہ بنایا جاتا رہا تو دوسری جانب ہمارے بے گناہ نوجوانوں کو سالوں سے لاپتہ کیا گیا ہے اور اب تک ان کے گھر والے بے سکونی و اضطراب میں زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ مسنگ پرسنز کے اہل خانہ کا ہر لمحہ تکلیف و پریشانی میں گزر رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ لاپتہ شیعہ نوجوان اگر کسی جرم کے مرتکب ہوئے ہیں تو انہیں آئین و قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے عدالتوں میں پیش کیا جائے آخر انہیں کس حکمران یا نادیداقوتوں کی خوشنودی کے لئے لاپتہ کیا جارہا ہے ملت جعفریہ ملک بھر میں جاری اس مجرمانہ اقدام کی مذمت کرتی ہے اور حکومت اور ریاستی اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ عمائدین کو مسنگ کرنے کا سلسلہ بند کریں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ حکمرانوں کی طرح اس حکومت کے مسنگ پرسنز کی رہائی کے لئے دعوے بھی جھوٹے نکلے اگر ہمارے نوجوانوں کو بازیاب نہیں کیا گیا تو پوری شیعہ قوم ماضی کی طرح ملک بھر سمیت دنیا بھر میں منظم احتجاج کرنے پر مجبور ہوگی۔

وحدت نیوز(سکردو) تندل چنداہ کی سڑک جو سیلابی تباہ کاری کی زد میں آگئی تھی۔ اس سڑک کی تعمیر نو کا آغاز کر دیا۔ اس موقع پر  صدر مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان آغا علی رضوی نے دعاؤں کے ساتھ کام کا آغاز کرایا۔اس سکیم کے تحت سڑک کی کشادگی اور عوامی مطالبہ پر چنداہ میں ری الائٹمنٹ بھی شامل ہے۔اس موقع پر محکمہ کے اعلی افسران کے ساتھ ایم ڈبلیو رہنما ابراھیم آزاد اور ناصر ماتمی اور معززین علاقہ موجود تھے۔عمائدین کی جانب سے منسٹر ایگریکلچر گلگت بلتستان محمد کاظم میثم،آغا علی رضوی اور محکمہ کے ذمہ داران کا شکریہ ادا کیاگیا۔

وحدت نیوز(کوئٹہ)مجلس وحدت مسلمین بلوچستان کے صوبائی صدر علامہ ظفرعباس شمسی نے کہا ہے کہ آج فلسطینی عوام کے ساتھ یکجہتی کا دن منایا جا رہا ہے، تقریبا ساڑھے سات دھائیوں سے غاصب اسرائیل فلسطینیوں کے ساتھ زیادتی کر رہاہے ۔ ظلم و ستم روا رکھے ہوئے ہے ۔ فلسطینیوں کا خون بہایا جا رہاہے ۔فلسطینیوں کا قتل عام کیا جارہاہے ۔ مجلس وحدت مسلمین بلوچستان ان تمام مظالم جو فلسطینیوں پر ڈھائے جاتے ھیں ان کی پر زور مذمت کرتی  ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ غاصب اسرائیل ایک نا جائز ریاست ہے جس نے فلسطینیوں کی زمین پر نا جائز قبضہ کر رکھا ہے  ۔ فلسطینیوں کی بستیوں پر قبضے کرتا جا رہاہے جو کہ بین الاقوامی قوانین کے مخالف ہے ۔ فلسطینیوں کی اپنے حقوق کو حاصل کرنے کے لیے جدوجہد جاری ہے ۔ اقوام متحدہ دیکھ رہاہے کہ فلسطینیوں کے کس قدر غاصب اسرائیل قتل و غارت کر رہاہے مگر ان تمام مظالم و بربریت کو روکنے میں ناکام رہا ہے۔

وحدت نیوز(احادیث) قال الامام السجّاد علیه‏ السلام:اَنتِ بِحَمدِاللّه‏ عالِمَةٌ غَیرُ مُعَلَّمَةٍ، فَهِمَةٌ غَیرُ مُفهَّمَةٍ
 امام سجاد علیہ السلام نے فرمایا:
"اے زینب(س)! آپ الحمد للہ ایسی عالمہ ہیں کہ جس نے کسی کے پاس تعلیم حاصل نہیں کی اور ایسی دانا ہیں کہ جس نے کسی سے کچھ نہیں سیکھا"۔

بحار الأنوار؛ ج ۴۵، ص

علی کی شیر دل بیٹی حضرت زینب کبریٰؑ

وحدت نیوز(آرٹیکل)جب رسول خدا (ص) حضرت زینب سلام اللہ علیہا کی ولادت کے موقع پر علی (ع) و فاطمہ (س) کے گھر تشریف لائے تو آپ نے نومولود بچی کو اپنی آغوش میں لیا۔ اس کو پیار کیا اور سینے سے لگایا۔ اس دوران علی (ع) و فاطمہ (س) نے کیا دیکھا کہ رسول خدا (ص) بلند آواز سے گریہ کر رہے ہیں۔ جناب فاطمہ (س) نے آپ سے رونے کی وجہ پوچھی تو آپ نے فرمایا "بیٹی، میری اور تمہاری وفات کے بعد اس پر بہت زیادہ مصیبتیں آئیں گی۔" کتب تاریخی میں شریکۃ الحسین کے ذکر شدہ القاب کی تعداد تقریباً 61 ہے۔ ان میں سے کچھ مشہور القاب درج ذیل ہیں، عالمہ غیر معلمہ، نائبۃ الزھراء، عقیلہ بنی ھاشم، نائبۃ الحسین، صدیقہ صغریٰ، محدثہ، کاملہ، عاقلہ، عابدہ، زاھدہ، فاضلہ، شریکۃ الحسین، راضیہ بالقدر والقضاء۔

عالمہ غیر معلمہ کا بچپن معصومین کی زیرنگرانی رہا۔ آپکی خوش قسمتی کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ آپ کی تربیت کرنے والی ماں سیدہ نساءالعالمین حضرت فاطمہ (س) ہیں، وہ فاطمہ جو دختر رسول ہے، جس کی رضا میں خدا راضی اور جسکے غضب سے خدا غضبناک ہوتا ہے۔ وہ فاطمہ جو بضعۃ الرسول ہے، جو خاتون جنت ہے، وہ فاطمہ کہ جس کی عبادت پر پروردگار مباہات فرماتا ہے، وہ فاطمہ جس کی چکی جبرئیل علیہ السلام چلاتے ہیں۔ اگر باپ کو دیکھیں تو حیدر کرار جیسا باپ ہے، آپ نے امام علی (ع) جیسے باپ کی زیر نگرانی پرورش پائی ہے۔ اس کے علاوہ پیغمبر اکرم (ص)، جو تمام انسانوں کے لئے "اسوہ حسنہ" ہیں، نانا کی حیثیت سے آپ کے پاس موجود ہیں۔ لہذٰا یہ آپ کے افتخارات میں سے ہے کہ آپ نے رسول خدا (ص)، امام علی (ع) اور فاطمہ زہرا (س) جیسی بےمثال شخصیات کی سرپرستی میں پرورش پائی۔ اس سے بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ آپ کی تربیت کس قدر بہترین اور مقدس ماحول میں ہوئی۔

آپ کی شادی 17 ہجری میں آپ کے چچازاد بھائی عبداللہ ابن جعفر ابن ابیطالب سے ہوئی۔ عبداللہ حضرت جعفر طیار کے فرزند اور بنی ہاشم کے کمالات سے آراستہ تھے۔ آپ کے چار فرزند تھے، جن کے نام محمد، عون، جعفر اور ام کلثوم ہیں۔ (البتہ آپکی اولاد کی تعداد میں اختلاف پایا جاتا ہے) کربلا کا واقعہ انسانی تاریخ میں ایک بےمثال واقعہ ہے۔ لہذٰا اس کو تشکیل دینے والی شخصیات بھی منفرد حیثیت کی حامل ہیں۔ امام حسین (ع) اور ان کے جانثاروں نے ایک مقدس اور اعلٰی ہدف کی خاطر یہ عظیم قربانی دی، لیکن اگر حضرت زینب سلام اللہ علیہا اس عظیم واقعے کو زندہ رکھنے میں اپنا کردار ادا نہیں کرتیں تو بلاشک وہ تمام قربانیان ضائع ہو جاتیں۔ کسی شاعر نے کیا خوب کہا ہے، "کربلا در کربلا می ماند گر زینب نبود۔" لٰہذا اگر ہم آج شہدائے کربلا کے پیغام سے آگاہ ہیں اور ان کی اس عظیم قربانی کے مقصد کو درک کرتے ہیں تو یہ سب عقیلہ بنی ہاشم سلام اللہ علیہا کی مجاہدت اور شجاعانہ انداز میں اس پیغام کو دنیا والوں تک پہنچانے کا نتیجہ ہے۔

بلاشبہ اسی وجہ سے انہیں "شریکۃ الحسین" کا لقب دیا گیا ہے۔ اگر امام حسین علیہ السلام اور ان کے جانثاروں نے اپنی تلواروں کے ذریعے خدا کی راہ میں جہاد کیا تو شریکۃ الحسین سلام اللہ علیہا نے اپنے کلام اور اپنے خطبات کے ذریعے اس جہاد کو اس کی اصلی منزل تک پہنچایا۔ کربلا میں سیدالشہداء حضرت امام حسین علیہ السلام اور آپ کے ساتھیوں کو شہید کرنے کے بعد دشمن یہ سمجھ رہا تھا کہ اس کو ایک بے نظیر فتح نصیب ہوئی ہے اور اس کے مخالفین کا ہمیشہ کے لئے خاتمہ ہوگیا ہے، لیکن نائبۃ الحسین سلام اللہ علیہا کے پہلے ہی خطبے کے بعد اس کا یہ وہم دور ہوگیا اور وہ یہ جان گیا کہ یہ تو اس کی ہمیشہ کیلئے نابودی کا آغاز ہے، یزید کا نام ہمیشہ ہمیشہ کے لئے ختم ہوگیا اور حسین آج بھی زندہ ہے۔

قتل حسین اصل میں مرگِ یزید ہے
اسلام زندہ ہوتا ہے ہر کربلا کے بعد
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
منابع:
آفتاب در مصاف۔ رھبر معظم انقلاب
زینب کبریٰ ولادت سے شھادت تک۔ آیت اللہ کاظم قزوینی


ترتیب وتحریر: محمد جان حیدری

Page 1 of 1280

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree