The Latest

وحدت نیوز(کوئٹہ)علمدار روڈ کوئٹہ پر جشن عید غدیر کے مرکزی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ غدیر کا پیغام فلاح انسانیت اور نظام ولایت و امامت امت مسلمہ کے اتحاد کا ضامن ہے لہذا شیعہ سنی مسلمانوں کو حضرت سید الانبیاء صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی وصیت کے مطابق قرآن کریم اور عترت اھل بیت علیھم السلام کے گرد جمع ہونا چاہئے جو امت کی عزت و سربلندی کے ضامن ہیں۔ غدیر خم کے میدان میں سید لولاک نے ایک شخصیت کی ولایت و امامت کا اعلان کرنے کے ساتھ ساتھ تا قیامت ایک نظام کا اعلان کیا جسے نظام ولایت کہا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہر دور کے منصف مزاج اھل سنت علماء نے حدیث غدیر کا اعتراف کیا اور عشق آل محمد ص کے جرم میں قید و شہادت کی صعوبتیں برداشت کیں امام نسائی سے لے کر مولانا طارق جمیل اور شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری تک ان علماء کی طویل فہرست ہے جنہوں نے ناصبی سازش کے مقابلے میں عشقِ اھل بیت علیھم السلام کا درس دیا۔

انہوں نے کہا کہ آج کی محفل جشن غدیر میں اھل سنت علماء کرام کی شرکت اتحاد امت کا عملی ثبوت ہے۔ اھل سنت کے علماء کرام اور عوام کو ناصبی ٹولے کی شرانگیزی پر گہری نظر رکھنی ہوگی جو یزید پلید کے وکیل صفائی بن کر آل امیہ کے فضائل بیان کرتے ہیں۔اس موقع پر تقریب جشن سے امام جمعہ کوئٹہ مرکزی رہنما مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ سید محمد ہاشم موسوی، علامہ شیخ ولایت حسین جعفری ،علامہ موسی حسینی و دیگر نے خطاب کیا اور شعرائے کرام نے بارگاہ امامت میں نذرانہ عقیدت پیش کیا۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ سید باقرعباس زیدی کی سربراہی میں وفد نے وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیر صدارت منعقدہ بین المسالک ہم آہنگی کے اجلاس میں شرکت کی ، وفد میں سید علی حسین نقوی اور علامہ مبشر حسن بھی شامل تھے ، ایم ڈبلیوایم کے رہنماؤں نے اس موقع پر ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل افتخار حسن چوہدری سے بھی ملاقات کی اور سکیورٹی ایشوز پر تبادلہ خیال کیا۔

علامہ باقرعباس زیدی نے اجلاس کے دوران کہا کہ عزاداری سید الشہداء ؑ ہماری موت وحیات کا مسئلہ ہے،جس پر کوئی کمپرومائز نہیں کیا جاسکتا۔ کورونا کے خدشات اپنی جگہ لیکن ملت جعفریہ ایک منظم وپر امن قوم ہے ، عزاداری میں ایس او پیز کی مکمل خیال رکھا جائے گا۔ سندھ حکومت عزاداری کے بڑے اجتماعات میں کورونا ویکسی نیشن سینٹرز کا قیام عمل میں لائے اور زیادہ سے عزاداروں کو ویکسین لگائےہم مکمل تعاون کریں گے۔

علی حسین نقوی نے کہا کہ سوشل میڈیا اسٹیٹس اور پوسٹوں پر اپنی مرضی سے تشبیہ دینا اور تعبیر دے کر ایف آئی آر درج کرلینا انصاف کے تقاضوں کے منافی ہے ۔ اس طرح کے معاملات میں ایف آئی آر کے اندراج کا اختیار ایس ایچ او سے لیکر براہ راست ڈی آئی جیز کو منتقل کیا جائے اور وہ بھی تمام مکاتب فکر کے علمائے کرام کی مشاورت اور تحقیقات کے بعد آیف آئی آر کے احکامات جاری کریں۔

رہنماؤں نے کہا کہ پیغام پاکستان ایک جامع دستاویز ہے جس پر اس کی اصل روح کے مطابق عمل کیا جائے، خطے میں بدلتےحالات اوردرپیش خطرات کے سبب علمائے کرام، مذہبی مقامات اور اجتماعات کو فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے، اس سال 14 اگست یوم آزادی 5 محرم الحرام کو آرہا ہے لہذٰا احترام محرم میں اس دن کو سادگی سے منایا جائے۔

نچلی سطح پر تمام سکیورٹی، بلدیاتی اور انتظامی اداروں کے افسران کو عزاداری کے اجتماعات کے بہترین انتظامات کا پابند بنایا جائے تاکہ عزاداران امام حسین ؑ کو پریشانی درپیش نہ ہو۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے زیر اہتمام شہید قائد علامہ سید عارف حسین الحسینی ؒ کی 33ویں برسی کے موقع پر لیاقت باغ راولپنڈی میں منعقدہ قرآن واہل بیتؑ کانفرنس کی دعوتی مہم اپنے اختتامی مرحلےمیں پہنچ گئی ہے ۔ ایم ڈبلیوایم کے مرکزی ، صوبائی اور ضلعی قائدین نے ملک بھرمیں فعال قومی شخصیات ، مذہبی وسیاسی رہنماؤں، بانیان مجالس وجلوس، ٹرسٹیز، پرمٹ ہولڈرز، علمائے کرام ، ذاکرین عظام سمیت مومنین ومومنات کی دہلیز تک اس عظیم الشان کانفرنس کا دعوت نامہ پہنچادیا ہے ۔

ایم ڈبلیوایم کے مرکزی سیکریٹری تعلیم اور کنوینئر کانفرنس نثار فیضی، مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی، علامہ اعجاز بہشتی، علامہ اقبال بہشتی، ملک اقرار حسین، اسدعباس نقوی، علامہ عبد الخالق اسدی، علامہ علی اکبر کاظمی سمیت دیگر قائدین نے مختلف اضلاع کے دورہ جات کیئے اور معززین کو قرآن واہل بیتؑ کانفرنس میں بھرپور شرکت کی دعوت دی ۔

علامہ اعجاز بہشتی نے خصوصی طور پر شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی کے آبائی علاقے پاراچنار کا دورہ کیا اور وہاں شہید کے فرزند علامہ سید علی حسینی ،سپریم لیڈر تحریک حسینی علامہ عابد الحسینی اور شخصیات کو دعوت نامہ پیش کیا۔ اس کے علاوہ نثار فیضی نے چکوال اور دیگر اضلاع، ناصرشیرازی نے سرگودھا اور گرد ونواح کے شہروں میں دورہ جات کرکے دعوت نامے تقسیم کیئے ۔

سید اسد عباس نقوی نے علامہ عبد الخالق اسدی کے ہمراہ آئی ایس او کے مرکزی صدر عارف حسین الجانی سے ملاقات کی اور انہیں قرآن و اہل بیتؑ کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی ، ملک اقرار حسین نے جہلم اور پنڈی ڈویژن کے مختلف اضلاع کا دورہ کیا اور مومنین کو قرآن واہل بیت کانفرنس میں بھرپور شرکت کی دعوت دی ۔ واضح رہے کہ قرآن واہل بیت کانفرنس ایک تاریخی اجتماع ثابت ہوگی جس میں ملک بھر سے لاکھوں عاشقان شہید حسینی شرکت کریں گے، ملک کے طول وعرض سے قافلے آج سے اسلام آباد کی جانب روانہ ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

وحدت نیوز(کراچی)مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے کراچی میں معصوم بچوں کے اغوا اور جنسی زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی نااہلی قرار دیا یے۔انہوں نے کہا کہ آئے روز درندگی کا کوئی نیا واقعہ سننے کو ملتا ہے۔عدم تحفظ کی اس فضا نے عام آدمی کی زندگی کو اذیت ناک بنا دیا ہے۔ایسے گھناؤنے واقعات کی روک تھام کے لیے حکومت کی جانب سے موثر قانون سازی کی ضرورت ہے۔یہ امر انتہائی افسوس ناک ہے کہ اس ملک میں قانون تو بن جاتے ہیں لیکن مجرمان عبرت ناک سزاوں کے شکنجے میں آنے سے با آسانی بچ جاتے ہیں۔یہ حقیقت جرائم پیشہ عناصر کے لیے حوصلہ افزائی کا باعث ہے۔انہوں نے کہا کہ جنسی زیادتی کے مجرمان کا عدالتی ٹرائل کم سے کم وقت میں کر کے اور انہیں عبرتناک سزائیں دے کر ان جرائم کو روکا جا سکتا ہے۔حکومت کو اس سلسلے میں سنجیدہ اقدامات کرنا ہوں گے۔

انہوں نے کورنگی واقعہ میں جاں بحق ہونے والی ماہم کے قاتلوں کی جلد از جلد گرفتاری  عبرت ناک سزا سمیت لواحقین کو حکومتی سطح پر امداد اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ جس علاقے میں معصوم بچوں کے قتل یا زیادتی کا واقعہ ہو وہاں کے ایس ایچ او کے خلاف بھی کارروائی کی جائے اور ایسے وحشیانہ  فعل کا ارتکاب کرنے والوں کو سرعام پھانسی پر لٹکایا کر نشان عبرت بنایا جائے۔

وحدت نیوز (لاہور)عید الاکبر عید غدیر کے پر مسرت موقع پر مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کی مرکزی سیکرٹری جنرل و رکن پنجاب اسمبلی محترمہ سیدہ زہرا نقوی نے تمام عالم اسلام کی خدمت میں مبارکباد پیش کرتے ہوے کہا کہ روز عید غدیر روز تکمیل دین ہے یہ وہ عید ہے کہ جس دن پروردگار نے اپنے حبیب ختمی مرتبت رسول خدا صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے ذریعے امیر المومنین حضرت علی علیہ السلام کو سلسلہ ہدایت باقی رکھنے کے لئے رسول خدا صل اللہ علیہ و آلہ وسلم کا جانشین منتخب کیا انہوں نے کہا کہ غدیر اسلامی ممالک کے لئے بہترین نمونہ عمل ہے، غدیر کے دن پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے اسلامی حکومت کی ذمہ داریوں کو بیان کیا ہے کیونکہ حکومت کا مطلب عدالت کا قائم کرنا ہے، اسی وجہ سے پروردگار نے رسول خدا صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے بعد حضرت علی علیہ السلام کو عدالت کے اجرا کے لئے انتخاب کیا ہے۔

 ان کا کہنا تھا عید غدیر کی اہمیت کے اظہار کے لیے روایات میں  اس دن کے چھوٹے سے چھوٹے سے نیک عمل کے بدلے بے شمار اجر و ثواب حتی کہ  انبیاء و صدیقین کے ہمراہ ہونے جیسا عظیم اجر ذکر کیا گیا ہے جس سے اس بابرکت دن کی عظمت و فضیلت کا اظہار ہوتا ہے اس دن خدا کی حمد و شکر بجا لانا چاہیے کہ اس نے ہمیں کائنات کی سب سے عظیم نعمت یعنی ولایت  مولا علی ابن ابی طالب علیہ سلام سے متمسک کیا  انہوں نے  مزید کہا کہ ہمیں چاہیے جہاں عید غدیر شان و شوکت سے منائ جاے وہیں اسکی تشہیر اور اسکے پیغام کو عام کرنے کی زمہ داری سے غفلت نہ برتیں اور اپنے اخلاق و کردار اور حقیقی معنوں میں پیروان ولایت امیرالمومنین علیہ سلام بن کر دنیا کو اس سلسلہ ھدایت کی طرف جذب کرنے والا کردار بھی پیش کریں۔

وحدت نیوز(کوئٹہ)مرکز تبلیغات اسلامی کے زیر اہتمام مدرسہ خاتم النبیین کوئٹہ میں جشن عید غدیر منعقد ہوا۔ تقریب جشن سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا کہ اہل سنت کے بڑے بڑے علماء اور محدثین نے حدیث غدیر خم کو نقل کیا ہے، لہذا حدیث غدیر شیعہ اور اہل سنت کے ہاں مسلمہ حقیقت ہے۔ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے السیف الجلی علی منکر ولایت علی علیہ السلام کے عنوان سے اعلان غدیر کو اہل سنت کتب احادیث سے نقل کرکے اس عظیم تاریخی حقیقت کا اعتراف کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ غدیر کے میدان میں جس نظام ولایت و امامت کا اعلان کیا گیا وہ تا قیامت بشریت کے لئے نجات کا پیغام ہے۔ عصر حاضر میں نظام ولایت نائب امام یعنی فقیہ عادل کی قیادت میں ظہور امام زمانہ علیہ السلام کے لئے زمینہ سازی میں مصروف ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ عصر حاضر میں غدیر کے ماننے والے نظام ولایت فقیہ کے سائے میں یزیدی قوتوں کے مقابل سینہ سپر ہیں۔ حزب اللہ کی کامیابی کا راز نظام ولایت فقیہ سے تمسک ہے۔ اس موقع پر تقریب سے بلوچستان نیشنل پارٹی کے رہنماء محمد لقمان کاکڑ، ایم ڈبلیو ایم بلوچستان کے صوبائی رہنما مولانا ذوالفقار علی سعیدی، مولانا سہیل اکبر شیرازی، مولانا عبد الحق جمالی، مسؤل مبلغین مولانا سید محمد رضا اخلاقی نے خطاب کیا جبکہ حاجی سید اصغر آغا، حاجی دولت حسین، حاجی غلام علی نے بھی تقریب میں خصوصی شرکت کی۔ اس موقع پر طلباء اور طالبات کے درمیان مضمون نویسی، کوئز اور تقریری مقابلہ منعقد ہوا، جس میں بہترین پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء و طالبات کو انعامات سے نوازا گیا۔

وحدت نیوز(کراچی)مجلس وحدت مسلمین کے وفد نے پاکستان پیپلز پارٹی صوبہ سندھ کے جنرل سیکریٹری، مشیر وزیراعلیٰ سندھ اور فوکل پرسن حکومت سندھ برائے امور محرم الحرام سید وقار مہدی سے وزیراعلیٰ ہاؤس میں ملاقات کی۔ وفد کی سربراہی صوبائی پولیٹیکل سیکرٹری سید علی حسین نقوی نے کی جبکہ وفد میں مولانا صادق جعفری، علامہ مبشر حسن، میر تقی ظفر اور عسکری رضا شامل تھے۔ ملاقات میں محرم الحرام سے قبل صوبہ سندھ اور بالخصوص شہر کراچی میں عزاداری کے اجتماعات کی سکیورٹی، بلدیاتی مسائل اور دیگر انتظامات کے حوالے سے تفصیلی گفتگو ہوئی۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے عید غدیر کے موقع پر تمام محبان محمدﷺ و آل محمدﷺ کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ولایت علی ؑ ابن طالبؑ معیار ایمان ہے۔ جس شخص کے دل میں فاتح خبیر مولائے کائنات حضرت علی علیہ السلام کا عشق موجود نہیں اس کی نماز روزہ اور دیگر عبادات کو سوائے جسمانی مشقت کے کوئی دوسرا نام نہیں دیا جا سکتا۔ رسول کریم ﷺ نے مولائے کائنات حضرت علی علیہ السلام کے چہرے کی طرف دیکھنے کو عبادت اور ان کی محبت کو واجب قرار دیا ہے۔یوم غدیر اس لکیرکا نام ہے جو منافق اور مومن کی راہوں کو جدا جدا کرتی ہے۔

 انہوں نے کہا کہ اس خالق و مالک کا ہر گھڑی ہر ساعت شکر ادا کر کے بھی اس نعمت کا حق نہیں کیا جا سکتا کہ اس نے ہمیں ایسے گھرانوں میں پیدا کیا جہاں بچوں کو لوریوں میں بھی یاعلیؑ یاعلی ؑ کی صدا سنائی جاتی ہے۔ حق و باطل کی شناخت کے لیے ذکر علیؑ سے موثر کوئی دوسرا ہتھیار نہیں۔انہوں نے کہا کہ روز عید رب کریم کی نعمتوں کے شکر ادا کرنے کا دن ہے۔ تمام پیروان ولایت علیؑ ابن ابی طالبؑ پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ آج کے دن اللہ تعالی کے احکامات کی بجا آوری کر کے اس کی اس عظیم نعمت کا شکر ادا کریں۔اپنے ضرورت مند عزیز ا اقرباءکو خوشی کے موقعوں پر فراموش نہ کیا جائے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس علمائے امامیہ پاکستان کے پلیٹ فارم سے ملک بھر کے سینکڑوں علماء، مبلغین اور واعظین نے 5 سالانہ پرشکوہ اجتماع میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور اس کی قیادت کی حکیمانہ ومدبرانہ پالیسیوں کی تائید و حمایت کا اعلان کردیا۔

اسلام آباد میں منعقدہ مجلس علماء امامیہ کے سالانہ اجتماع کے اعلامیے میں کہا گیا:

مجلس علماء امامیہ کا یہ اجتماع نظام امامت کو نظام نبوت کا تسلسل اور اسلام کی حقیقی تعبیر تسلیم کرتا اور عصرِ غیبت میں نظام ولایت فقیہ کو نظام امامت و ولایت کا تسلسل سمجھتا ہے۔


یہ اجتماع عصر غیبت میں نظام ولایت فقیہ کے ساتھ غیر متزلزل وابستگی کا اعلان کرتا اور ولی فقیہ حضرت آیت اللہ العظمی امام خامنہ ای حفظہ اللہ کی رہنمائی اور سرپرستی میں تعلیمات قرآن و اہلبیت علیہم السلام کی تبلیغ و ترویج کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔


یہ اجتماع عاشورا کی تحریک کو عدل و انصاف کے قیام، اصلاح و بیداری امت، الہی اقدار کے احیاء اور ظلم و ستم کے خلاف قیام کی تحریک سمجھتا اور تحریک عاشورا کے ساتھ وابستگی کو امت کی نجات کا ذریعہ سمجھتا اور اس ضمن میں عزاداری سید الشہداء کی روایت کے تسلسل کی راہ میں ہر قربانی سے عدم دریغ کا اعلان کرتا ہے۔


یہ اجتماع قومی یک جہتی، ملی وحدت اور اتحاد بین المومنین کی ضرورت کا احساس کرتے ہوئے اس کی تاکید کرتا ہے۔


یہ اجتماع پاکستان کی بعنوان ریاست لسانی و مسلکی سوچ سے پاک اسلامی و قومی شناخت کے احیاء کی ضرورت پر زور دیتا ہے۔


یہ اجتماع شعائر اسلامی کے احیاء، مذہبی آزادیوں سمیت جملہ آئینی حقوق کی ضمانت کا مطالبہ کرتا محرم الحرام و عید میلاد سمیت جملہ مذہبی عبادات کے راستے میں ڈالی جانے والی رکاوٹوں کی شدید مذمت کرتا ہے۔


یہ اجتماع ملک میں ایک قوم ایک نظام تعلیم کے نعرے کے تحت یکساں قومی نصاب کی تشکیل کے اقدام کی حمایت کرتا لیکن اس ضمن میں مسلکی و غیر دینی سوچ اور بنیادی آئینی و اسلامی اصولوں سے غفلت کی مذمت کرتا ہے۔


یہ اجتماع اسلامی جمہوریہ پاکستان میں غیر اسلامی ثقافت کی ترویج کے ہر اقدام کی مذمت کرتا ہے۔یہ اجتماع ملکی سالمیت اور استحکام کے لیے کی جانے والی حکومتی کوششوں کو سراہتا ہے۔
مجلس علماء امامیہ کا یہ فورم اپنی خودمختار حیثیت برقرار رکھتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی ملک و قوم کے لیے خدمات و قربانیوں کی قدر دانی کرتا اور ایم ڈبلیو ایم کے سربراہ علامہ راجا ناصر عباس جعفری کو اپنی مکمل حمایت کی یقین دہانی کرواتا اور ان کی قومی و ملی جدوجہد کی تائید کرتا ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس علماء امامیہ پاکستان تبلیغات کے شعبے میں فعال ایک خودمختار ادارہ ہے جو عرصہ 8 سال سے تعلیماتِ قرآن و اہلبیت ع کی ترویج و تبلیغ میں مصروفِ عمل ہے۔ گزشتہ روز امام بارگاہ اثنا عشریہ G-6/2 اسلام آباد میں مبلغینِ امامیہ کا 5واں سالانہ اجتماع بعنوان عظمتِ غدیر و عاشورا کانفرنس منعقد ہوا جس میں سینکڑوں مبلغین اور علمائے کرام بطور مہمان شریک ہوئے۔

حجت الاسلام و المسلمین ڈاکٹر سید شفقت حسین شیرازی کی زیر صدارت ہونے والے مجلس علماء امامیہ کے اجتماع سے بزرگ عالم دین اور مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ جناب حضرت علامہ راجا ناصر عباس جعفری، مجمع جہانی اہل بیت کے سربراہ جناب حضرت آیت اللہ محمد رضا رمضانی، جامعۃ الرضا اور نورِ معرفت ادارہ برائے تحقیقات اسلام آباد کے سربراہ حجت الاسلام و المسلمین جناب سید حسنین عباس گردیزی، جامعہ الولایہ کے مدرس اور محقق اور مجلس علماء امامیہ کے معاونِ امورِ تربیت جناب حجت الاسلام و المسلمین ڈاکٹر سید جاوید حسین شیرازی، دارالعلوم محمدیہ سرگودھا کے مدیر اعلیٰ اور مجلس علماء امامیہ کے بانی رکن حجت الاسلام و المسلمین ملک نصیر حسین و دیگر نے خطاب کیا۔

اجلاس سے اپنے خصوصی خطاب میں بزرگ عالمِ دین، مدبر و بابصیرت مذہبی و سیاسی رہنما، جامعہ الولایہ اور مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ حضرت علامہ راجا ناصر عباس جعفری حفظہ اللہ نے فرمایا: غدیر ایک مکمل نظام کے اعلان کا دن ہے اور اس نظام کا نام ولایت ہے۔ انہوں نے کہا ولایت معاشرے کے جملہ امور کے لیے ایک نظام ہے؛ مبلغین کی ذمہ داری ہے کہ وہ ولایت کو بطور ایک مکمل نظام معاشرے کو پیش کریں۔

مجلس علماء امامیہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے علامہ راجا ناصر عباس نے کہا دشمن کئی عناوین سے فتنہ ایجاد کرنا چاہتا ہے جن میں سے ایک فرقہ وارانہ فسادات کی صورت میں ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مبلغین کی ذمہ داری ہے کہ وہ خطباء، ذاکرین، بانیان مجالس و نوجوانوں کو دشمن کی اس سازش سے آگاہ کریں اور کوئی ایسا اقدام نہ اٹھائیں جس سے فرقہ وارانہ فساد پھیلے اور اس کا فائدہ دشمن کو ہو۔

حضرت علامہ راجا ناصر عباس جعفری نے مجلس علماء امامیہ پاکستان کے سالانہ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا: استکباری طاقتیں ہمارے وطن کو توڑنا چاہتی ہیں؛ وہ خطے کو ری سائز کرکے ری شیپ کرنا چاہتی ہیں۔انہوں نے کہا علاقائی طاقتوں کو اگر استکباری قوتوں سے نبرد آزما ہونا اور علاقائی طاقتیں اپنی قوم و ملت کے ساتھ مخلص ہیں تو وہ فرزند زہرا (س)  امام خامنہ ای حفظہ اللہ کی بصیرت اور تجربے سے فائدہ اٹھائیں۔

 انہوں نے مزید کہا دنیا میں اس وقت ایک ہی طاقت ہے جو استکباری طاقتوں کے ساتھ نبرد میں آپ کو کامیاب کروا سکتی ہے؛ وہ طاقت ولی فقیہ حضرت آیت اللہ العظمی امام خامنہ ای حفظہ اللہ ہیں۔حضرت علامہ راجا ناصر عباس جعفری نے مجلس علماء امامیہ کے سالانہ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا: شہید قائد حضرت علامہ عارف حسین الحسینی کا ہم سب کی گردنوں پر قرض ہے۔ شہید قائد رح ملکی سالمیت اور استحکام کی راہ کے شہید ہیں۔ ہم سنی ہیں یا شیعہ ہم سب ہر شہید قائد کا احسان ہے۔ اس قرض کی کم ترین ادائیگی قائد شہید حضرت علامہ عارف حسین الحسینی رح کی برسی کے پروگراموں میں شریک ہوکر ان کی ذات کو خراج تحسین پیش کرنا ہے۔ علامہ راجا ناصر عباس نے کہا: ہمارا اور آپ کا اگلا موعد اور وعدہ گاہ یکم اگست لیاقت باغ راولپنڈی ہے جہاں شہید قائد حضرت علامہ عارف حسین الحسینی کی برسی کی مرکزی تقریب منعقد ہورہی ہے۔

اجلاس سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے مجلس علماء امامیہ پاکستان کے سربراہ حجت الاسلام و المسلمین ڈاکٹر سید شفقت حسین شیرازی نے قرآن و حدیث کی روشنی میں تبلیغ کی اہمیت و ضرورت پر گفتگو کی۔ تبلیغ کو کار انبیا و آئمہ قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا قریہ قریہ جاکر تعلیمات قرآن و اہلبیت علیہم السلام سے لوگوں کو روشناس کروانا ایک عظیم فریضہ ہے۔ انہوں نے کہا اسی سنگین وظیفے کیوجہ سے اس منصب کی جہاں تکریم و تعظیم زیادہ ہے وہیں فرائض بھی سنگین ہیں۔

ڈاکٹر سید شفقت حسین شیرازی نے مجلس علماء امامیہ کے اجتماع سے بطور سربراہ خطاب کرتے ہوئے کہا: ہم مجلس علماء امامیہ پاکستان کی طرف سے بطور ایک مستقل ادارہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی ملک و قوم کے لیے خدمات کی قدر کرتے اور سربراہ ایم ڈبلیو ایم حضرت علامہ راجا ناصر عباس جعفری حفظہ اللہ کی بابصیرت قیادت پر مکمل اعتماد کرتے اور ملک و قوم کی خدمت کی اس راہ میں ان کے ساتھ ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہیں۔

مجلس علماء امامیہ کے اجتماع سے مجمع جہانی اہل بیت کے سربراہ حضرت آیت اللہ محمد رضا رمضانی حفظہ اللہ نے خصوصی آنلائن خطاب کیا۔ اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کربلا مبلغین کی گردن پر کچھ ذمہ داریاں ڈالتا ہے۔ انہوں نے کہا میرے نزدیک یہ ذمہ داریاں تین قسم کی ہیں۔ مستند اور معتبر تاریخ بیان کرنا، واقعہ عاشورا کے علل و اسباب کی تلاش اور ان کا بیان اور واقعہ عاشورا کی عبرتوں اور اس واقعہ سے حاصل ہونے والے سبق کی موجودہ حالات پر تطبیق کرنا۔ انہوں نے کہا امام عالی مقام سید الشہداء حضرت امام حسین علیہ السّلام کا قیام عدل و انصاف کے قیام، اقدار الہی کے احیاء اور ظلم و ستم اور استبداد و گمراہی کے مقابلے کے لیے تھا۔ انہوں نے حضرت امام حسین علیہ السلام کے خطبات سے استناد کرتے ہوئے فرمایا اگر گمراہی معاشرے میں پھیل رہی، ظالم و ستم گر حاکم ہو اور عدل و انصاف کی جگہ ظلم و برںریت لے لے تو ایسے میں نہ صرف زمانے کے امام بلکہ ہر مومن کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ قیام کرے۔

Page 1 of 1143

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree